ٹیلی فون پر پوچھئے
اگر آپ قرآن سے متعلق اپنے کسی سوال کا جواب ڈاکٹر قمر زمان صاحب سے براہ راست پوچھنا چاہیں تو اس فون نمبر پر رابطہ کیجئے:
+92 333 4901214
Every Saturday at
10.00 AM to 05.00 PM (PST)


مضامین
سلسلہ دعوت قرآنی کے پلیٹ فارم سے شائع شدہ کتب و مضامین ابلاغ قرآن کے مقصد کو پیش نظر رکھ کر پیش کی جا تی ہیں ۔ مؤقف سے اختلاف آپ کا حق ہے مگر یہ اختلا ف خالص قرآنی ہونا چاہئے۔ مثبت تنقید ہمارے لئے باعث حصول علم ہوگی۔
سلسلہ دعوت قرآنی نہ تو کسی فرقے سے متعلق ہے اور نہ ہی کسی شخصیت یا اس کے افکار کی تعلیم کا نام ہے۔ اگر آپ نے بھی قرآن پر کوئی تحقیق کی ہو اور اس کو دوسروں تک پہنچانا چاہیں تو ہمارے صفحات آپ کے لئے حاضر ہیں۔
حقیقت صوم پر اعترازات تحریر و تحقیق   ڈاکٹر قمر زمان

اشاعت اوّل:2009 ,12

ترمیم:2009 ,12
ڈاکٹر قمر زمان صاحب کی کتاب حقیقت صوم کو اہل عقل و دانش کی نظر میں جو مقبولیت اور پذیرائی حاصل ہوئی وہ اپنی جگہ مگر ساتھ ہی اس کتاب پر کچھ اعترازات بھی سامنے آئے۔ ان اعترازات کے فرداً فرداً جوابات بھی ارسال کئے جاتے رہے۔ اسی سلسلے میں کراچی سے محترم ایس اے انصاری صاحب کے دس اعترازات پر مشتمل مراسلے موصول ہوئے تھے۔ جن کے جوابات یکے بعد دیگرے ارسال بھی کر دیئے گئے تھے ،مگر ان کے جوابات انصاری صاحب کی طرف سے اب تک موصول نہیں ہوئے۔
ہم نے کوشش کی تھی کے اپنے قارئین کو بھی اس قلمی بحث میں ساتھ لے کرچلا جائے تاکہ اگر کسی کے فہم میں کوئی تشنگی ہو تو وہ دور ہو سکے۔ مگر اس کے باوجود ہمارے بہت سے احباب تک انصاری صاحب کےاعتراضات اور ڈاکٹر قمر زمان صاحب کے جوابات نہیں پہنچ سکے۔ چناچہ ان تمام احباب کے لئے اب وہ تمام مراسلت آستانہ کے پلیٹ فارم پر دستیاب ہے۔
قارئین کی سہولت کے لئے انصاری صاحب کے اعترازات من و عن پیش کئے جا رہے ہیں تاکہ کسی ابہام کا اندیشہ نہ رہے۔
View Previous
Read & Download This Book
Move Next
اس مضمون کے مطالعہ کے لئے آپ کے کمپیوٹر میں ایڈوب ریڈر کی موجودگی ضروری ہے۔ اگر آپ کے کمپیوٹر میں ایڈوب ریڈر انسٹال نہیں ہے تو آپ اس سافٹ ویر کو فری انسٹال کر سکتے
سوال و جواب   
اگر آپ اس مضمون”حقیقت صوم پر اعترازات“ سے متعلق کوئی سوال پوچھنا چاہیں یا اپنی رائے دینا چاہیں تو آستانہ بلاگ کے صفحات آپ کے لئے حاضر ہیں۔ کوشش کیجئے کہ سوال مختصر اور موضوع سے متعلق ہو۔ آپکی طرف سے پوچھے گئے سوالات یا مثبت اعترازات ہمارے اور دیگر پڑہنے والوں کے لئے سوچ کی نئی راہیں کھولتے ہیں جن سے سیکھنے کے مزید مواقع ملتے ہیں۔سوال پوچھنے کے لئے یہاں کلک کریں....
 فہرست مضامین 
 احباب کو بھیجئے 
اگر آپ یہ صفحہ اپنے احباب کو بذریعہ ای میل بھیجنا چاہیں تو
یہاں کلک کریں.....
  کیا آپ کو معلوم ہے ؟
کتب احادیث
تفاسیر
سیرت رسول
تاریخ
ادب جاہلیہ
سب کے سب دوسری صدی ہجری کے بعد میں وجود میں آئی ہیں
سوچئے اور غور کیجئے ۔۔۔۔۔۔کہ
کیا ان دو صدیوں تک اسلامی ریاستوں میں کوئی علمی تحریری کام نہیں کیا گیا؟
کیا اسلامی ریاستوں کی عدالتوں نے تمام فیصلے زبانی کلامی جاری کئے؟
کیا تمام جنگوں میں محاذ پر احکامات بھی زبانی کلامی بھیجے گئے؟
یا
ان دو صدیوں کا تمام تر تحریری ریکارڈ کسی سازش کے تحت ضائع کیا گیا اور اس کی جگہ وہ مواد لایا گیا جو آج نہ صرف دین بن گیا ھے بلکہ جس کی وجہ سے قرآن کو بھی پس پشت ڈال دیا گیا ہے۔

       HOME  BOOKS  ARTICLES  ABOUT US  AIM AASTANABLOG    
 AASTANA.COM © 2005-2010
NEWS LETTER: TELL A FRIEND: BOOKMARK THIS SITE: CONTACT US: